پاکستان

'الیکشن 2024'، ملالہ کو شدید تنقید کا سامنا کیوں؟

Web Desk

'الیکشن 2024'، ملالہ کو شدید تنقید کا سامنا کیوں؟

الیکشن 2024، ملالہ کو شدید تنقید کا سامنا کیوں؟

نوبل انعام یافتہ ملالہ یوسف زئی کا پاکستان میں ہونے والے عام انتخابات پر بیان جاری کرنا تنقید کی برسات کرواگیا۔

ملالہ یو سف زئی نے حال ہی میں سماجی رابطے کی ویب سائٹ 'ایکس' پر پاکستان میں جاری عام انتخابات کے بارے میں پوسٹ کی۔

انہوں نے لکھا کہ ‘پاکستان کو فری اور فئیر انتخابات کی ضرورت ہے، جن میں ووٹوں کی گنتی میں شفافیت اور نتائج کا احترام شامل ہے'۔

انہوں نے یہ بھی لکھا کہ 'مجھے ہمیشہ کی طرح آج بھی یقین ہے کہ ہمیں ووٹرز کے فیصلے کو خوش اسلوبی سے قبول کرنا چاہیے۔ مجھے امید ہے کہ ہمارے منتخب عہدیدار، چاہے وہ حکومت میں ہوں یا اپوزیشن میں، پاکستان کے عوام کے لیے جمہوریت اور خوشحالی کو ترجیح دیں گے۔‘

ملالہ کہ اس پوسٹ پر انہیں بے انتہا تنقید کا سامنا کرنا پڑا ، پوسٹ کے ردعمل پر صارفین نے لکھا کہ ‘ملالہ واضح طور پر یہ نہیں سمجھتی کہ اسے کچھ کہنے سے پہلے انٹرنیٹ پولیس سے اجازت کی پرچی کی ضرورت ہے۔ اگلی بار، وہ اپنے خدشات کو صاف ستھرا اسپریڈشیٹ پر بہتر طریقے سے ترتیب دے، ہر بحران کے لیے ٹائم سلاٹس کے ساتھ مکمل کریں‘۔

ایک صارف نے لکھا کہ وہ تمام 'لوگ' جو ملالہ سے اسرائیل کے خلاف بولنے کا مطالبہ کر رہے ہیں (گویا وہ ان کی مقروض ہیں) پہلے طالبان کے خلاف بولنے کا اپنا ریکارڈ دکھائیں'۔

ملالہ کہ اس پوسٹ پر انہیں بے حد تنقید کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے،لوگوں نے کہا کہ فلسین کہ بارے میں تو آپ نے آب تک کچھ نہیں کہا نہ آواز اٹھائی،ملالہ سے یہ سوال بھی کیا گیا کہ اب آپ کو پاکستان کی یاد کیسے آگئی؟

تازہ ترین