پاکستان

دنیا کا واحد 'زرخیز صحرا ' بھی پانی کی قلت شکار کیسے؟

مقامی لوگ زرخیز زمین کے فوائد سے محروم

Web Desk

دنیا کا واحد 'زرخیز صحرا ' بھی پانی کی قلت شکار کیسے؟

مقامی لوگ زرخیز زمین کے فوائد سے محروم

دنیا کا  واحد  زرخیز صحرا   بھی  پانی کی  قلت  شکار  کیسے؟

پاکستان کے صوبہِ سندھ میں واقع دنیا کا 18واں بڑا اور واحد زرخیز صحرا 'صحرائےِ تھرپارکر' سے متعلق حیران کن انکشاف سامنے آگیا۔

'صحرائےِ تھرپارکر' کی زرخیز زمین پودوں کے لیے تو سازگار ہے مگر یہاں کے مقامی لوگ اس سے مستفید ہونے سے محروم ہیں۔

کہا جاتا ہے کہ یہاں زیادہ بارش نہیں ہوتی جس کے باعث لوگوں کو بنیادی ضرورت کے لیے بھی پانی کی شدید قلت کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔

یہاں کے مقامی لوگ بنیادی طور پر پانی کنوؤں سے حاصل کرتے ہیں جو بارش نہ ہونے باعث سوکھے پڑجاتے ہیں۔

جولائی اور ستمبر کے دوران ہونے والی بارشوں سے یہاں کے تالابوں میں پانی محفوظ کرلیا جاتا ہے جسے پانی کی قلت کے دوران لوگوں اور جانوروں کی پیاس بجھانے کے لیے استعمال کیا جاتا ہے۔

ایک طرف جہاں یہ زرخیز صحرا سارا سال سیاحوں کی دلچسپی کا مرکز بنا رہتا ہے وہیں دوسری جانب یہاں پر مقیم لوگ بوند بوند کو ترستے دکھائی دیتے ہیں۔

تازہ ترین