ٹیکنالوجی

ایک چشمہ اور کام دو، ٹیکنالوجی کی دنیا کا شاہکار

ایک چشمے کو 2 مختلف مقاصد میں استمعال ہونے کے قابل بنایا ہے۔

Web Desk

ایک چشمہ اور کام دو، ٹیکنالوجی کی دنیا کا شاہکار

ایک چشمے کو 2 مختلف مقاصد میں استمعال ہونے کے قابل بنایا ہے۔

چشمے کا فریم کے ایک ہی سوائپ میں لینس کو ایڈجسٹ کردیتا ہے
چشمے کا فریم کے ایک ہی سوائپ میں لینس کو ایڈجسٹ کردیتا ہے

ڈیپ آپٹکس نامی کمپنی نے ایسا چشمہ متعارف کرایا ہے جو پہننے والی کی مرضی کے مطابق اپنی نوعیت کو تبدیل کرسکتا ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق ڈیپ آپٹکس کمپنی نے 32 ڈگری نارتھ نامی چشمے متعارف کرائے ہیں جو پکسلیٹڈ لیکویڈ کرسٹل (ایل سی) لینس کا استعمال کرتے ہیں۔ یہ چشمے دھوپ سے بچاؤ اور پڑھنے دونوں مقاصد کیلئے استعمال ہوسکتے ہیں۔

پکسلیٹڈ لیکویڈ کرسٹل والے چشمے 2017 سے موجود ہیں لیکن ڈیپ آپٹکس نے اس ٹیکنالوجی کا استعمال کرتے ہوئے ایک چشمے کو  2 مختلف مقاصد میں استمعال ہونے کے قابل بنایا ہے۔

چشمے کا فریم کے ایک ہی سوائپ میں لینس کو ایڈجسٹ کردیتا ہے۔ جب آپ کو دھوپ میں نکلنا ہو تو صرف دائیں فریم پر پیچھے کی طرف سوائپ کریں اور اگر کچھ پڑھنا ہو تو دوبارہ اسی طرح پیچھے کی طرف سوائپ کریں۔

مزید برآں لینس پاور کو 0 سے 2 عشاریہ 5  تک بڑھایا جاسکتا ہے اور کم وزن بلٹ-ان بیٹری 48 گھنٹے تک عینک کو چارج رکھ سکتی ہے۔

کمپنی کا اس حوالے سے کہنا تھا کہ ہماری ٹیکنالوجی ایل سی لینز کا استعمال کرتے ہوئے بصارت کی خرابی کو درست کرتی ہے۔ لینس انسانی آنکھ کی طرح کام کرتے ہیں، پہننے والے کو اپنی مرضی کے مطابق دیکھنے کی اجازت دیتے ہیں۔

تازہ ترین