خواتین

سن اسکرین کا استعمال جِلد کیلئے کتنا ضروری؟

دنیا بھر میں ہر سال جلد کے سرطان کے 1.5 ملین نئے کیسز سامنے آتے ہیں

Web Desk

سن اسکرین کا استعمال جِلد کیلئے کتنا ضروری؟

دنیا بھر میں ہر سال جلد کے سرطان کے 1.5 ملین نئے کیسز سامنے آتے ہیں

اسکرین گریب
اسکرین گریب

ماہرینِ جلد کے مطابق سورج کی شعاعیں کینسر کا باعث بنتی ہیں، اس لیے ضروری ہے کہ خود کو اس سے محفوظ رکھا جائے۔ 

دنیا بھر میں ہر سال جلد کے سرطان کے 1.5 ملین نئے کیسز سامنے آتے ہیں اور 2040 تک اس تعداد میں 50 فیصد اضافہ متوقع ہے۔

جب ہم سورج کے سامنے آتے ہیں تو یو وی تابکاری ہماری جلد کے خلیات میں پائے جانے والے ڈی این اے، پروٹین اور دیگر مالیکیولز کو نقصان پہنچاتی ہے۔ جو قبل از وقت بڑھاپے کا سبب بن سکتا ہے، اور جلد کے کینسر میں مبتلا ہونے کا خطرہ بڑھا سکتا ہے۔

تاہم کم ایس پی ایف سن اسکرین سورج سے تابکاری کے خطرے کو قدرے کم کرتی ہے۔

ایس پی ایف کا مطلب ہے ‘سورج کی حفاظت کا عنصر‘، اور ایس پی ایف صرف یو وی بی شعاعوں سے تحفظ کی سطح کی نشاندہی کرتا ہے۔

ماہرین عام طور پر مشورہ دیتے ہیں کہ لوگ سورج کی روشنی میں جانےسے 20-30 منٹ پہلے سن اسکرین لگائیں، تاکہ اسے جلد میں جذب کرنے کا وقت مل سکے۔ اسے دن میں دو بار لگانا بہتر ہوسکتا ہے ، کیونکہ مطالعہ سے پتہ چلتا ہے کہ زیادہ تر لوگ سن اسکرین کو کم استعمال کرتے ہیں۔

ماہرین یہ بھی مشورہ دیتے ہیں کہ پسینہ آنے کے بعد سن اسکرین کو دوبارہ استعمال کریں۔سن اسکرین کو جلد کی دیگر مصنوعات جیسے موئسچرائزر کے ساتھ نہ ملانا بھی ضروری ہے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ سن اسکرین وقت کے ساتھ ساتھ کم موثر ہو جاتی ہے، لیکن عام طور پر، یہ آپ کی خریداری کی تاریخ سے تین سال تک قابل استعمال ہوتی ہے۔

سن اسکرین کی تمام مصنوعات کو کم از کم تین سال کی خریداری کے بعد شیلف لائف کی ضرورت ہوتی ہے، جب تک کہ اس کی میعاد ختم نہ ہو اور بشرطیکہ اسے براہ راست سورج کی روشنی یا زیادہ گرمی میں نہ رکھا گیا ہو۔

چھوٹے بچوں کی جلد یو وی تابکاری کے لئے زیادہ حساس ہوتی ہے ، لہذا یہ خاص طور پر ضروری ہے کہ وہ سورج سے محفوظ رہیں۔

 چھ ماہ سے کم عمر کے بچوں کو سن اسکرین نہیں لگانا چاہئے۔ انہیں براہ راست دھوپ کے سامنے نہیں آنا چاہئے۔

تازہ ترین