صحت

بچوں کی مقبول سوغات 'کاٹن کینڈی' سے کینسر کا خطرہ

اکثر بچے اس کی روئی جیسی ساخت کی وجہ سے اسے پسند کرتے ہیں۔

Web Desk

بچوں کی مقبول سوغات 'کاٹن کینڈی' سے کینسر کا خطرہ

اکثر بچے اس کی روئی جیسی ساخت کی وجہ سے اسے پسند کرتے ہیں۔

اسکرین گریب
اسکرین گریب

چینی سے تیارکردہ بظاہر بے ضرر نظر آنے والی ’کاٹن کینڈی‘ سے کینسر کا خطرہ کچھ ہضم نہ ہونے والی بات لگتی ہے۔

تاہم  بعض بھارتی ریاستیں نہ صرف ایسا سوچتی ہیں بلکہ حکام نے وہاں رنگ برنگی، بالوں کے گچھے جیسے اس میٹھے لچھے کی فروخت پر پابندی عائد کردی ہے۔

جب لیبارٹری میں ٹیسٹ کے لیے کاٹن کینڈی کے بھیجے گئے نمونوں میں کینسر پیدا کرنے والے مادے روہڈامائین-بی کی موجودگی کی تصدیق ہوئی تو بھارت کی جنوبی ریاست تامل ناڈو نے اس پابندی پر عمل درآمد کا آغاز کیا۔

گزشتہ ماہ کے اوائل میں بھارتی علاقے پڈوچیری نے بھی اس میٹھے لچھے پر پابندی لگا دی تھی جبکہ دیگر ریاستوں نے بھی اس کے نمونوں کی جانچ شروع کر دی تھی۔

 کاٹن کینڈی، جسے پاک و ہند میں اس کی ظاہری صورت کے باعث ’گڑیا کے بال‘ بھی کہا جاتا ہے ، دنیا بھر کے بچوں میں مقبول ہے۔

یہ میٹھی سوغات اکثر  تفریحی پارکوں، میلوں اور ایسے مقامات پر فروخت کی جاتی ہے جہاں بچوں کی کثیر تعداد میں آمد و رفت ہو۔

اکثر بچے اس کی روئی جیسی ساخت کے سبب اسے پسند کرتے ہیں۔

بھارتی فوڈ حکام کا کہنا ہے کہ یہ کاٹن کینڈی صحت کے لیے کافی زیادہ خطرناک ہے۔

 تامل ناڈو کے  شہر چنئی میں فوڈ سیفٹی آفیسر پی ستیش کمار نے بھارتی میڈیا کو بتایا کہ کاٹن کینڈی میں موجود آلودگی جسم کے تمام اہم اعضا کو متاثر کرنے سمیت کینسر کا باعث بن سکتی ہے۔

 جب لیبارٹری ٹیسٹوں میں نمونوں میں روہڈامائین-بی نامی کیمیائی مرکب کی موجودگی کا پتا چلا تو ٓحکومت نے اس کی فروخت پر پابندی لگانے کا اعلان کیا۔

مذکورہ کیمیکل آتشیں گلابی رنگ دیتا ہے اور اسے ٹیکسٹائل، کاسمیٹکس اور چیزوں کو رنگنے کے لیے استعمال کیا جاتا ہے۔

تحقیق سے پتا چلتا ہے کہ یہ کیمیکل کینسر کے خطرے کو بڑھا سکتا ہے اور یورپ اور کیلیفورنیا نے اسے فوڈ ڈائی کے طور پر غیر قانونی قرار دے دیا ہے۔

تامل ناڈو کے وزیر صحت ما سبرامنیم نے ایک بیان میں واضح کیا ہے کہ کھانے کی پیکنگ، درآمد، فروخت یا شادیوں اور دیگر عوامی تقریبات میں پیش کردہ کھانوں میں روہڈامائن۔بی کا استعمال فوڈ سیفٹی اور اسٹینڈرڈز ایکٹ مجریہ 2006 کے تحت قابل سزا جرم ہوگا۔

تامل ناڈو کی دیکھا دیکھی پڑوسی ریاست آندھرا پردیش نے بھی مبینہ طور پر کینسر کی موجودگی کو جانچنے کے لیے کاٹن کینڈی کے نمونوں کی جانچ شروع کردی ہے اور  دہلی میں فوڈ سیفٹی کے اہلکار بھی کاٹن کینڈی پر پابندی لگانے پر زور دے رہے ہیں۔

تازہ ترین