انفوٹینمنٹ

ملالہ یوسفزئی کی نئی کتاب کا موضوع کیا ہوگا؟

Web Desk

ملالہ یوسفزئی کی نئی کتاب کا موضوع کیا ہوگا؟

ملالہ یوسفزئی کی نئی کتاب کا موضوع کیا ہوگا؟

نوبیل انعام یافتہ پاکستانی خاتون ملالہ یوسف زئی ان دنوں اپنی یادداشتوں کو کتاب کی شکل میں ڈھالنے میں مصروف ہیں۔

 لڑکیوں کی تعلیم کے لیے کام کرنے والی ملالہ یوسف زئی کی اس نئی کتاب کا اعلان پبلشنگ گروپ سائمن اینڈ شوسٹر کی ایٹریا بکس کی جانب سے کیا گیا ہے۔ اس کتاب میں کیا ہوگا، اس کا عنوان کیا ہوگا اور یہ کب تک شائع ہوگی؟، اس بارے میں اب تک کچھ نہیں بتایا گیا ہے۔

 ایٹریا کی جانب سے جاری کردہ ایک بیان میں25 سالہ ملالہ یوسف زئی کا کہنا تھا کہ ان کی زندگی کے گزشتہ چند برس غیرمعمولی تبدیلیوں اور ترقی کے ساتھ آنے والی پریشانیوں اور خوشیوں سے بھرپور ہے جو ان کے ذہن پر نقش ہے۔ اُن کے بقول ’’یہ میری اب تک کی سب سے زیادہ ذاتی کتاب ہے اور مجھے امید ہے کہ قارئین کو میری کہانی میں پہچان، یقین دہانی اور بصیرت ملےگی۔‘‘

ادھر ایٹریا نے اس نئی کتاب کو ’’ریکوری کی طرف لوٹنے اور شناخت کی تلاش کی ایک حیرت انگیز کہانی، عوامی توجہ کا مرکز بننے والی ان کی عمر کی واضح تلاش اور آج کی ان کی زندگی پر ایک قریبی نظر‘‘ قرار دیا ہے۔

 اس سے قبل ملالہ یوسف زئی نے ’’آئی ایم ملالہ‘‘ کتاب لکھی تھی جو سال 2013 ء میں شائع ہوئی تھی۔

اس کتاب کے ایک سال بعد یعنی 2014 ء میں انہیں 17 برس کی عمر میں امن کے نوبیل انعام سے نوازا گیا تھا۔ ملالہ آوکسفرڈ یونیورسٹی سے گریجویٹ ہیں اور انہوں نے پاکستان کرکٹ بورڈ کے ایک منیجر عصر ملک سے شادی کی ہے۔

 ان کی پروڈکشن کمپنی ایکسٹراکریکولر کا ایپل ٹی وی پلس کے ساتھ فلم اور ٹیلی وژن پراجیکٹس کی ایک وسیع رینج کے لیے معاہدہ بھی ہے۔ ملالہ یوسف زئی لڑکیوں کو تعلیم سے روکنے کے طالبان کے پیش کردہ نظریات کے خلاف مسلسل آواز بلند کرتی رہی ہیں۔

انہیں تحریکِ طالبان پاکستان (ٹی ٹی پی) نے سال 2012 ء میں پاکستان کے شہر سوات میں اسکول سے گھر آتے وقت گولی ماری تھی۔

تازہ ترین